- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -

مرکزی ملزم عابد علی کو مارکر دفنائے جانے کا دعویٰ کردیا گیا

0 7

سانحہ موٹروے کے مرکزی ملزم عابد کو تاحال گرفتار نہیں کیا جا سکا۔اسی حوالے سے سینئر صحافی عمران ریاض خان کا کہنا ہے کہ مجھے 3 زبردست کرائم رپورٹرز نے بتایا ہے کہ سانحہ موٹروے کیس کا ملزم عابد علی پولیس کی مدد سے ڈکیتیاں کرتا تھا۔

- Advertisement -

عابد علی پولیس کے کہنے پر ہی ڈکیتیاں کرتا تھا۔پولیس والوں کے عابد کے ساتھ اچھے تعلقات تھے۔ اگر عابد علی کو گرفتار کر کے میڈیا کے سامنے لایا جاتا ہے تو وہ بہت
اہم انکشافات کرے گا کہ کس کس پولیس والے نے اس سے کون سے کام کروائے۔

ایک رپورٹر نے تو مجھے یہ تک کہہ دیا کہ اس بات کا قوی امکان ہے کہ عابد علی کو مار کے دبا دیا گیا ہو اور اب اس کی لاش بھی نہیں ملے گی۔

یہ معلومات غیر تصدیق شدہ ہیں،لیکن یہ باتیں وہ لوگ کر رہے ہیں جو کرائم کو سمجھتے ہیں۔ دوسری جانب سانحہ موٹروے کے مرکزی ملزم عابد کی گرفتاری میں ماسک اہم رکاوٹ بن گیا ہے۔

دو ہفتے گزر جانے کے باوجود بھی عابد علی قابو نہ آ سکا۔ملزم کی گرفتاری کے لیے پولیس کی 8 ٹیموں کے مسلسل چھاپے اور ملزم کے 7مختلف حلیوں پر مشتمل خاکے بھی کارگر ثابت نہ ہو سکے۔تفتیشی ٹیموں کے ذرائع کے مطابق کورونا سے بچاؤ کے لیے ماسک مرکزی ملزم کی گرفتاری میں رکاوٹ بن گیا ہے۔

- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -