- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -

حکومت جو بھی فیصلہ کرے تعلیمی ادارے 11 جنوری کو کھلیں گے

تعلیمی ادارے مزید بند رکھنا تعلیم سے دشمنی ہو گی،11 جنوری کو تعلیمی ادارے کھلیں گے، اور تدریس کا عمل پہلے کی طرح جاری رہے گا۔صدرآل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن کاشف مرزا کا بیان

0 52

صدرآل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن کاشف مرزا سے سوال کیا گیا کہ اگر تعلیمی ادارے مزید بند رکھنے کا اعلان کیا جاتا ہے تو نجی تعلیمی اداروں کا کیا لائحہ عمل ہو گا،جس کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے آل پاکستان پرائیویٹ سکولز فیڈریشن کا موقف بالکل واضح ہے۔ہم نے پورے ملک میں 15 اگست سے تعلیم کا سلسلہ شروع کیا لیکن درمیان میں حکومت نے ایک بار پھر تعلیمی اداروں کو بند کر دیا۔

حکومت جو بھی فیصلہ کرے تعلیمی ادارے 11 جنوری کو کھلیں گے

اب حکومت نے 11 جنوری کی تاریخ دی ہے اور اسی تاریخ پر اسکول کھولے جائیں گے۔ہم نے 300 سے زائد اتحادی تنظیموں کے ساتھ مل کر اسکولز کھولنے کا فیصلہ کیا ہوا ہے۔اگر حکومت مزید تعلیمی ادارے بند رکھتی ہے تو یہ تعلیم سے دشمنی ہو گی۔

 

- Advertisement -

- Advertisement -

7 کروڑ سے زائد بچوں کواسکولز سے باہر کر دیا گیا ہے۔کاشف مرزا نے مزید کہا کہ انہوں نے صرف جنوری میں اسکولوں کو بند کرنے کی تاریخ میں توسیع نہیں کیا جائے گی بلکہ حکومت اس کے بعد بھی تاریخیں دیتی رہے گی،اس طرح تو سیشن ستمبر تک چلا جائے گا۔

 

یہ ہمارے بچوں کا مستقبل تباہ کر رہے ہیں جو ہم بالکل قبول نہیں کریں گے۔لہذا 11 جنوری کو ہر صورت میں اسکولز کھولے جائیں گے۔

 

۔واضح رہے کہ ملک بھر میں تعلیمی ادارے 25 جنوری سے مرحلہ وار کھولے جانے کا امکان ہے تاہم حتمی فیصلہ(آج) پیر 4جنوری کو بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس میں ہوگا۔ اس حوالے سے بتایا گیا کہ ملک میں تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق تمام فیصلے ہیلتھ ایڈوائزری کی بنیاد پر لیے جائیں گے۔

 

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر قیادت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس میں چاروں صوبوں کے وزرائے تعلیم شریک ہوں گی.اس ضمن میں فیڈرل ایجوکیشن سے تعلق رکھنے والے ذرائع نے بتایا کہ وفاقی حکومت نے تعلیمی ادارے 3 مرحلے میں کھولنے کی تجویز دی ہے۔

 

 

 

- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -