اہم خبریںپاکستان

اے ٹی سی نے عمران کے پولی گراف ٹیسٹ سے متعلق درخواست کی سماعت کی۔

گوجرانوالہ کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے وزیر آباد حملے میں پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان سمیت زخمی ہونے والے تمام افراد کے پولی گراف ٹیسٹ کرانے کی درخواست سماعت کے لیے منظور کر لی۔

پولی گراف ٹیسٹ کی درخواست وزیر آباد حملے کے مرکزی ملزم نوید بشیر کے وکیل میاں داؤد نے پیر کو کیس کی سماعت کے دوران دی تھی۔ ایکسپریس نیوز اطلاع دی

عدالت نے سابق وزیراعظم عمران خان پر قاتلانہ حملے کی فرسٹ انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر) میں درج تمام زخمیوں کو پولی گراف ٹیسٹ کے لیے نوٹس بھی جاری کیا۔

علاوہ ازیں عمران خان اور سینیٹر اعجاز چوہدری سمیت تمام زخمیوں کے موبائل فون فرانزک تجزیے کے لیے ضبط کرنے کی درخواست پر بھی نوٹس جاری کیا گیا۔

سماعت کے دوران ملزم کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ اگر ملزم کا پولی گراف ٹیسٹ ہوسکتا ہے تو تمام زخمی گواہوں کا ایک ہی ٹیسٹ کیوں نہیں کرایا جا سکتا۔

یہ بھی پڑھیں: جے آئی ٹی رپورٹ میں عمران کے قتل کی سازش کی نشاندہی کی گئی، فواد

انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ عمران خان، سینیٹر اعجاز چوہدری اور وزیر آباد حملے کے دیگر زخمیوں کے موبائل فون ضبط کرنے کا حکم دیا جائے اور انہیں کیس میں اہم ثبوت قرار دیا جائے۔

ملزم کے وکیل نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) وزیر آباد حملے سے متعلق “اصل شواہد” اکٹھا نہیں کر رہی اور تفتیش کاروں پر الزام لگایا کہ وہ تفتیش کے دوران ان کے موکل کے ساتھ امتیازی سلوک کر رہے ہیں۔

انہوں نے عدالت سے عمران خان سمیت وزیرآباد حملے کے تمام زخمیوں کی میڈیکل رپورٹس فراہم کرنے کی بھی استدعا کی۔

عدالت نے ان کی میڈیکل رپورٹس کی درخواست منظور کرتے ہوئے ملزمان کے وکیل کی درخواستوں پر 19 جنوری تک جواب جمع کرانے کا حکم دیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button