پنجاب میں ضمنی انتخابات!!! پی ٹی آئی کو بڑا سرپرائز، پیپلزپارٹی اور ن لیگ نے اہم فیصلہ کرلیا

لاہور: (ویب ڈیسک) پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن نے پنجاب میں ضمنی الیکشن مل کر لڑنے کا فیصلہ کیا ہے، پیپلزپارٹی اپنے امیدوار دستبردار کرانے پر رضامند ہوگئی ہے۔ لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما اور صوبائی وزیر عطا تارڑ نے کہا کہ پنجاب کے ضمنی الیکشن مشترکہ طور پر لڑیں گے۔

پیپلزپارٹی کی حمایت کے ساتھ ہر حلقے میں ہماری پوزیشن بہتر ہوگی۔ عطا تارڑ نےکہا کہ پیپلزپارٹی کے مشکور ہیں کہ انہوں نے حمایت کا یقین دلایا، پیپلز پارٹی کے امیدوار اپنےکاغذات نامزدگی واپس لیں گے، پیپلزپارٹی بھی ہمیں ہر محاذ پر اپنا ساتھی پائےگی، ہم گورننس سے متعلق ایک دوسرےکے ساتھ مشاورت کا عمل بڑھائیں گے۔ اس موقع پر رہنما پیپلزپارٹی حسن مرتضیٰ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کا ن لیگ میں انضمام نہیں ہو رہا، عام انتخابات میں ایک دوسرے کے مدمقابل ہوں گے۔حسن مرتضیٰ کا کہنا تھا کہ مہنگائی عمران خان حکومت کی غلط پالیسیوں کا نتیجہ ہے، پیٹرول کی قیمتوں میں اضافےکے باعث مہنگائی بڑھ رہی ہے، حکومت مہنگائی پر قابو پانےکی کوشش کر رہی ہے ، ریلیف بھی دے رہی ہے۔ دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کا کہنا ہےکہ کالعدم ٹی ٹی پی سے مذاکرات امن کے لیے اور آئین کے تحت ہوں گے۔وزیراعظم ہاؤس میں پارلیمنٹ کی قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ طے پایا ہےکہ ٹی ٹی پی سے مذاکرات آئین پاکستان کے ماتحت ہوں گے اور یہ مذاکرات پارلیمنٹ کی گائیڈ لائنزکے مطابق ہوں گے۔ رانا ثنا اللہ کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کمیٹی کی کارروائی پر ارکان پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا ہے، اس حوالے سے جلد پارلیمنٹ کا اِن کیمرا اجلاس بلایا جائے گا۔ وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ یوٹرن ماہر عمران خان سے پوچھا جائےکہ امریکی سازش کا بیانیہ کہاں گیا، عمران خان آئے دن شوشے چھوڑ رہے ہیں، نیب اصلاحات کے بعد اب 90 دن کا ریمانڈ نہیں ہوگا، 90 دن کا ریمانڈ نہ ہونےکا فائدہ اب تحریک انصاف کے لوگوں کو ہوگا۔

Akhtar Sardar

اپنی رائے کا اظہار کریں