میں قوم کو اسلام آباد سیاست کے لیے نہیں، انقلاب کے لیے بلا رہا ہوں، عمران خان

عمران خان نے کہا ہے کہ میں قوم کو اسلام آباد سیاست کے لیے نہیں، انقلاب کے لیے بلا رہا ہوں۔

چیئر مین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ شاندار استقبال کرنے پر مردان کا شکریہ، شاندار استقبال پر مردان کا دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ یہاں آپ سب کو اسلام آباد مارچ کیلئے تیار کرنے آیا ہوں، میں مردان والوں کو اسلام آباد سیاست کیلئے نہیں انقلاب کیلئے بلا رہا ہوں، میں پاکستان کو حقیقی آزادی دینے کیلئے آپ سب کو بلا رہا ہوں۔

عمران خان نے کہا ہے کہ نوجوانوں نے خاص طور پر اسلام آباد مارچ میں شرکت کرنی ہے، میری عمر سے جو بھی کم ہے وہ نوجوان ہے، 70 سال سے کم عمر افراد  نوجوان ہیں۔

چیئر مین پاکستان تحریک انصاف نے کہا کہ میں پاکستان کی ساری ماؤں، بہنوں اور بچوں کو بھی دعوت دینے آیا ہوں، میرے والدین کہتے تھے تحریک پاکستان میں عورتیں، بچے اور بزرگ سب شامل تھے۔

انہوں نے کہا کہ چوروں کے ٹولے کو یہاں سے پیغام دے رہا ہوں، لندن میں بیٹھا مفرور، بزدل ڈاکو بھی سن لے، تم نے اس ملک کے فیصلے نہیں کرنے، پاکستان کی قیادت کون کرے گا یہ فیصلہ عوام کرے گی۔

عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان پر یہ فیصلہ کن وقت ہے، امریکا کے غلاموں سے اس ملک کو آزاد کرنا ہے، ڈاکوؤں کے ٹولے سے بھی ملک کی جان چھڑانی ہے، یہ تھری سٹوجز جن میں ڈاکو، زرداری بڑی بیماری اور ڈیزل شامل ہے۔

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف نے کہا کہ ڈیزل نے آتے ہی وہ وزارت لی جس میں کمائی ہو، اگر الیکشن کی تاریخ نہ دی تو عوام کا سمندر اسلام آباد آ رہا ہے، عوام کا یہ سمندر سب کچھ بہا کر لے جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ امریکا کے ساتھ مل کر سازش کی گئی، امریکا کے ایک چھوٹے سے سرکاری افسر نے مجھے ہٹانے کی دھمکی دی، ڈونلڈ لو نے کہا عمران خان کو نہ ہٹایا تو تمہیں نقصان ہو گا۔

عمران خان نے کہا ہے کہ امریکی افسر نے کہا اگر شہباز شریف کو بٹھا دیا تو پاکستان کو معاف کر دیں گے، اس سے پوچھتا ہوں تم ہو کون پاکستان کو معاف کرنے والے، ہم امریکیوں کے نوکر اور غلام نہیں ہیں۔

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف نے کہا کہ شہباز شریف بوٹ پالش اور آصف زرداری امریکیوں کے غلام ہیں، ڈیزل نے امریکی سفارتکار کو کہا مجھے موقع دیدیں میں بہتر خدمت کروں گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ امریکیوں کے غلام ہیں، ہم اس کی امت ہیں جو دنیا کی تاریخ کا عظیم ترین لیڈر تھا، خوف کی زنجیر انسان کو پرواز نہیں کرنے دیتی، اللہ ایمان والوں کے خوف دور کردیتا ہے۔

عمران خان نے کہا ہے کہ کوئی جنرل اس وقت تک بڑا جنرل نہیں بن سکتا جب تک وہ خوف ختم نہ کر دے، زندگی اور موت اللہ کے ہاتھ میں ہے، میرے خلاف میڈیا پر کمپین کی گئی، عوام میری اتنی ہی عزت افزائی کر رہی ہے۔

 چیئرمین پاکستان تحریک انصاف نے کہا کہ کبھی غلام بڑے کام نہیں کر سکتا، صرف آزاد آدمی بڑے کام کرتا ہے، ہمارے اوپر بٹھائے گئے امریکا کے غلام کبھی  قوم کو عظیم قوم نہیں بننے دیں گے، جب ہمیں حکومت ملی یہ چور 10 سال حکومت کر چکے تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں