شاعر مشرق کے یوم ولادت باسعادت پر زیکاس سکول آف سسٹم کے زیر اہتمام پرشکوہ تقریب تحریر : منشاقاضی

شاعر مشرق کے یوم ولادت باسعادت پر زیکاس سکول آف سسٹم کے زیر اہتمام پرشکوہ تقریب تحریر : منشاقاضی

A glorious birthday celebration of the poet of the East, organized by the Zakas School of System
Written by Mansha Qazi

زندہ قومیں اپنے قومی محسنوں اور مربیوں کی زندگیوں کے تابناک اوراق اپنی آنے والی نسلوں کے اذھان و قلوب پر الٹتے پلٹتے رھتے ھیں ، زیکاس سکول لاھور میں نسل نو کی ایک مثالی مادر علمی ھے

 

 تحریر : منشاقاضی

تحریر : منشاقاضی

 

جہاں تعلیم کے ساتھ ساتھ نوے فیصد تربیت کا بھی اھتمام کیا جاتا ھے اور اپنے قومی ھیروز کو ایک لحظہ بھی فراموش نہیں کیا جاتا ، دبستان اقبال کے سربراہ کی دورس نگاہ کا اعجاز ھے کہ وہ ایسے سکولوں کا انتخاب کرتے

 

جہاں اقبال کی فکر کی قندیلیں نسل نو کے سینوں میں عزم و ھمت کا نور تخلیق کر رھیں ھوں جس نور کو علامہ محمد اقبال خودی سے تعبیر فرماتے ھیں ،

 

نقابت کے فرائض ادا کرنے والی خطیبہ جو بولتی نہیں تھی موتی رولتی تھی ۔مہمان خاص فضیلت مآب جناب اقبال صلاح الدین ھمہ تن گوش تھے اور نویرا بابر جواں سال قائد فہد عباس مینجنگ ڈائریکٹر زیکاس سکول آف سسٹم کو خطبہ استقبالیہ کے لیے دعوت دے رھی تھی

 

 

اور علامہ محمد اقبال کے یہ اشعار تو سکول کے سارے طلبا وطالبات نے حرزِ جاں بنا لئیے ھیں ، دیار عشق میں اپنا مقام پیدا کر ۔۔ نیا زمانہ نئے صبح و شام پیدا کر ۔۔ میر طریق امیری نہیں غریبی ھے ۔۔ خودی نہ بیچ غریبی میں نام پیدا کر

 

جناب فہد عباس نے نسل نو کے درمیان نواسہ ء شاعر اسلام جناب اقبال صلاح الدین کو پا کر فرطِ محبت کے جذبات سے لبریز الفاظ میں جب خوش آمدید کہا تو فضا رنگ و نور کی کہکشائیں بکھیرتی ہوئی گونہ بیخودی کی کیفیت میں چلی گئی

 

آمد جو سنی آپ کی الللہ رے انتظار ۔۔ آنکھیں بچھا دی ھم نے جہاں تک نظر گئی ، مہمان خاص کو نویرا بابر نے خطاب کی دعوت دی تو سارے پیر و جواں اور طلبا و طالبات ارادت و عقیدت کے چراغوں کی روشنی کی لو میں ایستادہ ھو گئے اور مہمان خاص گویا ھوئے

 

 تحریر : منشاقاضی

تحریر : منشاقاضی

 

کہ میں آج سکول کے بچوں کی شاعر مشرق ڈاکٹر علامہ محمد اقبال سے محبت اور عقیدت کے مناظر دیکھ کر بے پناہ قلبی اور روحانی مسرت محسوس کر رھا ھوں ،

 

جناب اقبال صلاح الدین نے تفصیلات پر اختصار کو ترجیع دی اور پورا سمندر قطرے میں انڈیل دیا ، ایس ایم رضوی ، جناب ذوالفقار جنجوعہ نے خطاب کیا ڈاکٹر قیصر رفیق کی رفاقت سے ھم محروم لطف تکلم رھے ،

 

زیکاس سکول آف سسٹم کے چیف ایگزیکٹو فضیلت مآب جناب ضمیر الحسن نے اپنے دست مبارک سے مہمان خاص فضیلت مآب جناب اقبال صلاح الدین کو شیلڈ پیش کی اور دوسرے مہمانوں کو بھی یادگار زمانہ شیکڈیں دی ،

 

 

تلاوت قرآن کریم کی سعادت حمزہ نے حاصل کی نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سعادت چھٹی کلاس کی ذھین و فطین طالبہ عریب نے حاصل کی ،

 

 تحریر : منشاقاضی

تحریر : منشاقاضی

 

ٹیبلو پیش کرنے والے طلبا وطالبات نے علامہ محمد اقبال کی روح کو خوش کر دیا ، لا پھر وھی بادہ و جام اے ساقی ،، تقریر دلپذیر فریحہ ثاقب ، کنزا عامر اور مریم ناصر نے علامہ اقبال کی شاعری ، نثر و نظم اور حالات زندگی کا احاطہ کر کے خوبصورت انداز میں خراج عقیدت پیش کیا اقبال اور خودی پر بچوں نے بڑے بڑے فلسفیوں کو بھی مات کر دیا

 

 

پرندے کی فریاد کا منظر پیش کرنے والے طالبات نے غلامی کی زنجیروں کو اپنے عمل سے سنگینی کو رنگنئی ء بہار میں بدل دیا، خدا وہ روز بد دشمن کو نہ دکھلائے ۔۔

 

قفس کے سامنے جلتا تھا آشیاں اپنا ، سپاس تشکر کے لئیے مس شازیہ نے مہمان خاص فضیلت مآب جناب اقبال صلاح الدین کی آمد کو سکول کا اعزاز قرار دیا

 

اور تمام مہمانوں کی آمد زیکاس سکول آف سسٹم کے اساتذہ کرام خواتین و حضرات اور طلبا وطالبات کے لئیے حوصلہ افزا ثابت ھوئی ، جناب فہد عباس کی والدہ محترمہ کی خصوصی آمد اور موجودگی کو آسودگی محسوس کیا ،

 

قومی ترانے کے لیئے سب ایستادہ ھو گئیے اور سکول کی پرشکوہ عمارت کا معائنہ کرایا گیا اور لذتِ کام و دہن سے تواضع کی گئی ،

 

مہمان خاص فضیلت مآب جناب اقبال صلاح الدین نے چائنی اساتذہ کرام کی موجودگی اور ان کی فرض شناسی کی بے پناہ تعریف کی ، تقریب کو پرشکوہ ، پروقار اور انتظامات کے عقب میں حسین ترین خیال فہد عباس کی دورس نگاہ کا اعجاز تھا ،

 

۔۔۔اٹھ کہ اب بزم جہاں کا اور ھی انداز ھے ۔۔ مشرق و مغرب میں تیرے دور کا آغاز ھے

 

اپنی رائے کا اظہار کریں