ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی تاریخ میں زندہ ھیں ( حسب منشا) تحریر۔۔ منشاقاضی

ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی تاریخ میں زندہ ھیں ( حسب منشا) تحریر۔۔ منشاقاضی

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history
(As intended) Writing … Mansha Qazi

ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی اس جہان فانی سے عالم جاودانی میں منتقل ہوگئے ہیں انا لللہ و ان الیہ راجعون، ھر ذی روح نے موت کا ذائقہ چکھنا ھے ،

 

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history (As intended) Writing ... Mansha Qazi

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history
(As intended) Writing … Mansha Qazi

اور اس عارضی قیام کو چھوڑ کر دائمی قیام کی طرف انتقال کر جانا ھے ، الطاف حسن قریشی صاحب کے برادر اکبر اور اردو ڈائجسٹ کے صدر مجلس ادارت ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی کے انتقال سے قومی نقصان پہنچا ھے ،

 

آپ کی خدمات کا دائرہ وسیع پیمانے پر تھا ، شہرت میں الطاف حسن قریشی کا نام بہت بلند ھے اور ان کی تحریریں نور کی تنویریں اور میدان کار زار میں مجاھدوں کی شمشیریں ھیں ، مگر جو کام ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی کر گئے ھیں

 

اس کا ذکر مؤرخ ھمیشہ کرتا رھے گا ، جس طرح علی برادران تاریخ میں زندہ ھیں اسی طرح قریشی برادران کے کارناموں کی صدائے بازگشت سنائی دیتی رھے گی ،

 

اس وقت الطاف حسن قریشی صاحب کو اپنے برادر بزرگ کا جو صدمہ پہنچا ھے الللہ تعالیٰ انہیں حوصلہ دے اور ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی جن کو مرحوم لکھتے وقت دل سیپارہ ھوتا ھے بے شمار محاسن کا مجموعہ تھے

 

وہ نظر بہ ظاھر ایک انسان تھے مگر اپنی ذات میں ایک ادارہ تھے قریشی برادران کی قومی خدمات سے انکار نہیں کیا جا سکتا ،

 

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history
(As intended) Writing … Mansha Qazi

ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی نے سماجیات کے میدان میں جو خدمات انجام دیں ھیں اور آنے والی نسلوں کی اصلوں کی فصلوں کو شاداب وسیراب کیا ھے یہ آپ کا ملت پاکستانیہ پر بہت بڑا احسان ھے ،

 

وہ ملت کے محسن تھے ، بقول مختار مسعود کے ، محسن دوسروں کے لئے زندہ رھتا ھے شہید دوسروں کے لئیے جان دے دیتا ھے

 

دونوں کا کردار قابل ستائش ھے ، ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی کا یہ اعجاز ھے کہ آپ نے پاکستان میں ذھین و فطین طلباء وطالبات کے لئیے وظائف مقرر کیئے ھوئے ھیں اور یہ سلسلہ جاری رکھا جائے گا ،

 

 

 

جہالت کے اندھیروں کو دور بھگانے میں ڈاکٹر صاحب کا کردار جزوِ اعظم کی حیثیت رکھتا ھے ، سلطنت عمان سے جاوید نواز صاحب نے ڈاکٹر صاحب کی خبر سنی تو وہ صدمے سے نڈھال ہو گئے آپ کا قریشی برادران سے جو تعلق ھے

 

وہ مثالی ھے میں نے جاوید نواز صاحب کی گفتگو میں وہ سیاسی ھو ، ادبی ھو یا سماجی ھو آپ نے الطاف حسن قریشی صاحب اور ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی مرحوم کا تذکرہ خوبصورت انداز میں بیان ضرور کرنا ھے

 

اور یہ حقیقت ھے قریشی صاحب بھی جاوید نواز صاحب کا ذکر کرتے رھتے ھیں بلکہ فون کر کے ان کی خیریت دریافت کرتے ہیں

 

آج جس طرح ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی کی دائمی جدائی کا صدمہ کا دکھ ان کے لواحقین کو ھے اسی طرح جاوید نواز صاحب بھی غم زدہ ھیں ،

 

الللہ تعالیٰ ھم سب کو صبرِ جمیل عطا فرمائے اور مرحوم کو اپنے جوار رحمت میں جگہ دے ، پھول وہ شاخ سے ٹوٹا کہ چمن ویراں ھے ،

 

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history (As intended) Writing ... Mansha Qazi

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history
(As intended) Writing … Mansha Qazi

آج منہ ڈھانپ کے پھولوں میں صبا روئے گی ، مولانا عبد الرؤف ملک صاحب کو رات کو خبر پہنچی تو آپ نے مرحوم کے لئیے دعائے مغفرت کی اور آپ کی خدمات کا اعتراف کیا ، ڈاکٹر آصف محمود جاہ صاحب کی بھی یہی کیفیت ھے

 

آپ نے ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی صاحب کی ناگہانی موت کو ملک و ملت کا نقصان قرار دیا اور آپ کی خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ، فاروق تسنیم صاحب ، پاک آسٹریلیا فرینڈز شپ کے صدر جناب ارشد نسیم بٹ ،

 

بشیر خان یوسفزئی ، وصی محمد خان ، ڈاکٹر کیوان قدر خان ملزئی ، جناب عاصم آفندی صاحب ، قاضی محمد صدیق صاحب ،

 

خواجہ محمد اسلم صاحب ، انوار قمر پیرس سے ممتاز ملک ، امریکہ سے اقلیتی راھنما جے سالک اور سابق طالب علم راھنما حسیب احمد شیخ نے گہرے دکھ اور رنج و الم کا اظہار کیا ھے ، ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی ایک مجاہد ،غازی اور اب شہید کے درجے پر فائز ھو گئیے

 

ان کی پوری زندگی خدمت خلق میں گزری ھے ، مولانا محمد علی جوہر کی وفات پر ٹائمز آف انڈیا کے لندنی نمائندے نے لکھا تھا

 

کہ اس سے بہتر انجام کیا ھو سکتا ھے کہ لڑتے لڑتے میدان جنگ میں جان دی ، ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی نے بھی جہالت کے خلاف لڑتے ہوئے جان دی ھے اور وہ شہادت کے رتبے کو پا گئے ھیں ، خدا رحمت کند ایں عاشقان پاک طینت را،

 

ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی تاریخ میں زندہ ھیں ( حسب منشا) تحریر۔۔ منشاقاضی

Dr. Ijaz Hassan Qureshi is alive in history
(As intended) Writing … Mansha Qazi

اردو ڈائجسٹ کے بانی ، مجلس ادارت کے صدر ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کی تقریب میں مولانا عبد الرؤف ملک صاحب خطیب آسٹریلیا جامع مسجد ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی مرحوم کے ساتھ نصف صدی کی رفاقت اور مرحوم کی خدمات کا اعتراف کر رھے ھیں

 

اور برادر اصغر جناب الطاف حسن قریشی مرحوم کی یادوں کے چراغ روشن فرما رھے ھیں ، نقابت کے فرائض پروفیسر قاضی سلطان سکندر ، نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سعادت جناب محمد ریاض آسی نے حاصل کی، ملک بھر سے کثیر تعداد میں عبقری،فکری اور صحافت کے شعبے سے متعلقہ نامور شخصیات جن میں جناب ارشاد عارف ، جناب عبدلرزاق نقشبندی، ادیب خطیب منشاقاضی ،

 

 

پاک آسٹریلیا فرینڈز شپ کے صدر جناب ارشد نسیم بٹ ، فاروق تسنیم ، ملک کفایت اعوان ، جناب وصی شاہ ، خالد محمود ، زائد نصیر خان کے علاوہ ھر شعبہ ھائے حیات سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی اور ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی مرحوم کے سعادت مند فرزند دلبند جناب طیب اعجاز قریشی نے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا

 

اور انہیں اظہار خیال کی دعوت دی ،آخر میں حضرت مولانا عبد الرؤف ملک صاحب نے مرحوم کی مغفرت کے لئے پروفیسر ڈاکٹر قاضی سلطان سکندر صاحب کو دعائے مغفرت کے لیئے کہا

 

 

جنہوں نے ڈاکٹر اعجاز حسن قریشی مرحوم کی روح کو ایصال ثواب کے لئے دعا فرمائی ۔

 

اپنی رائے کا اظہار کریں