ابھینندن سوچ رہا ہوگا کہ اب میں نے کیا کردیا:فواد چوہدری

وفاقی وزیر فواد چوہدری نے ابھینندن کو ایوارڈ ملنے پر دلچسپ تبصرہ کرکے سب کو ہنسنے پر مجبور کر دیا۔

وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنی ٹوئٹ میں لکھا کہ ابھینندن سوچ رہا ہوگا کہ اب، میں نے کیا کردیا، یہ مجھے کہاں لیکر جارہے ہیں۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ ابھینندن کو ایوارڈ دے کر بھارتی ایوان صدر میں کامیڈی فلم کی شوٹنگ کا سین فلمایا گیا۔

واضح رہےکہ ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار احمد نے کہا ہے کہ بھارت کو فروری 2019 کے پاکستان کے منہ توڑ جواب کے باعث مستقبل میں ایسی مہم جوئی سے باز رہنا چاہئِے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ فروری 2019 میں ایف 16جہاز گرانے کے بھارتی دعوے بےبنیاد اور من گھڑت ہیں۔بھارتی پائلٹ ابھینندن کی گرفتاری سے پہلے پاکستان کے ایف 16جہاز گرانے کا بھارتی دعوی بھی جھوٹا ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان اس بھارتی دعوے کو مسترد کرتا ہے۔ بین الاقوامی ماہرین اور امریکی حکام نے تصدیق کی تھی کہ اس دن کوئی ایف 16طیارہ نہیں مار گرایا گیا، بین الاقوامی اور امریکی ماہرین نےطیاروں کے اسٹاک کا بغور جائزہ لے کر طیارہ نہ گرائے جانے کی تصدیق کی تھی۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ ابھینندن کو ایوارڈ دینے کا مقصد بھارتی عوام کو اصل مدعہ سے توجہ ہٹانے کی کوشش ہے۔ بھارتی پائلٹ کو ایوارڈ دینا اپنے عوام کو خوش کرنا اور خفت مٹانا ہے، بھارتی پائلٹ کو اعزاز سے نوازنا فوجی ضابطوں اور اقدار کے منافی ہے۔ شکست خوردہ بھارتی پائلٹ کو اعزاز سے نوازنا اپنا مذاق اڑانے کے مترادف ہے۔عاصم افتخار کا کہنا ہے کہ 27 فروری 2019 کو پاک فضائیہ نے 2 بھارتی طیاروں کو دن کی روشنی میں مار گرایا تھا۔ ایک بھارتی مگ21 طیارہ آزاد جموں و کشمیر کی حدود میں مارگرایا تھا، تباہ شدہ بھارتی جہاز سے نکلنے والے پائلٹ کو پاکستان نے پکڑ کر بعد میں جذبہ خیرسگالی کے تحت رہا کیا، بھارتی پائلٹ کو واپس بھجوانا اس بات کا غماز ہے کہ پاکستان بھارتی ہٹ دھرمی کے باوجود امن کا خواہاں ہے۔

Akhtar Sardar

اپنی رائے کا اظہار کریں